Message of Islam (Last Part) By (Late) Prof. N.A. Faruqi

اسلام کا ایک اور وصف اخوت اور مساوات کا نذریہ ہے۔ اسلام میں کوئی اپنی قومیت ، یا نسب ، یا علم ، یا دولت یا عہدے کے اعتبار سے بڑا چھوٹا نہیں ہے۔ جو زیادہ پرہیزگار ہے اسے دوسروں پر فضیلت حاصل ہے اور کسی کو نہیں۔ بادشاہ وقت بھی مسجد میں جاکر اپنے دربان کے ساتھ صف میں کھڑا ہوکر نماز پڑھے گا۔ کسی انسان کا جھوٹا نا پاک نہیں، کوئی پیشہ حقیر نہیں ،ہمافے سال بھر کے خرچ سے بچے ہوئے مال پر ڈھائی فی صد زکاۃ ہے جسے فقیروں اور مسکینوں کا 'حق 'بتایا گیا ہے۔  
عورتوں کو جتنے حقوق اسلام نے دئے ہیں اتنے اس زمانے میں کسی مذھب  اور کسی تہذیب میں عورت کو حاصل نہیں تھے۔ طلاق کو انتہائی دشوار بنانے کے لئے انتہائی آسان کیا گیا ہے۔اسلامی شریعت کے جو قانون قرآن کی روشنی میں بنے ہیں ان میں کوئی تبدیلی کرنے کا کسی کو بھی اختیار نہیں  البتہ دوسرے قوانین میں حالات اور زمانے کی رعایت سے اور علما کے اتفاق  سے ترمیم و تبدیل کی جا سکتی ہے۔
اسلام کا خلاصہ یہ ہے کہ انسانوں کےمعاملات آپس میں اچھے ہوں،  اور  ہر انسان کا تعلق اپنے خالق اور پالنہار سے مضبوط ہو  اور اخلاص کے آدھار پر ہو۔
الحمدللہ ختم شد۔

Popular posts from this blog

An Interactive Session with my Quran teacher (Dr. Farhat Hashmi)

"...to Him belong the best names."

The Big Question